نئی تعلیمی پالیسی بھارت کی معیشت کو 5 ٹریلین ڈالر بنانے میں معاون ثابت ہوگی: پوکھریال

https://www.urdu.indianarrative.com/Pokhrel.jpg

مرکزی وزیر تعلیم ڈاکٹر رمیش پوکھریال نشنک

نئی دہلی ، 27مارچ (انڈیا نیرٹیو)

مرکزی وزیر تعلیم ڈاکٹر رمیش پوکھریال ‘نشنک‘ نے ہندوستان کی قومی تعلیمی پالیسی -2020 کو نہ صرف تعلیم کے شعبے میں بلکہ معاشی محاذ پر بھی خود انحصار کرنے کی اہلیت کا ذکر کیا ہے۔

مرکزی وزیر تعلیم پوکھریال نے ایک پروگرام کے دوران ’نئی تعلیمی پالیسی: روڈ میپ ٹو رول آؤٹ‘ کے عنوان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نئی تعلیمی پالیسی ہندوستانی معیشت کو پانچ کھرب ڈالر بنانے میں مددگار ثابت ہوگی۔ قابل ذکر ہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے مالی سال 2024-25 تک ہندوستان کو پانچ کھرب ڈالر کی معیشت بنانے کا ہدف مقرر کیا ہے۔

پوکھریال نے کہا کہ ہماری اپنی تعلیمی پالیسی کا ہونا ضروری ہے۔ جرمنی ، اسرائیل جیسے ممالک کی مثال دیتے ہوئے پوکھریال نے کہا کہ ان کی تعلیمی پالیسیوں نے انہیں اس سطح تک بڑھنے میں مدد فراہم کی ہے کہ وہ اب جس مقام پر ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ بھارت کی اپنی تعلیمی پالیسی وزیر اعظم مودی کے طے کردہ پانچ کھرب ڈالر کی معیشت کے ہدف کو حاصل کرنے میں معاون ثابت ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ اکیسویں صدی میں پوری دنیا کو ہندوستان سے بہت زیادہ توقعات ہیں اور ہم ’اعلیٰ معیار کے مواد‘ سے لیس ’صلاحیت‘ کے ذریعے دنیا کو بہت کچھ دے سکتے ہیں۔ این ای پی-2020 تحقیق اور جدت کو فروغ دیتا ہے اور ہندوستان کو وشو گرو بنائے گا۔

پوکھریال نے کہا کہ یہ پالیسی ملکی تعمیر میں اہم کردار ادا کرے گی۔ میں نوجوانوں سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ وزیر اعظم مودی کے خود انحصار ہندوستان کے خواب کو حقیقت میں تبدیل کرنے میں مکمل تعاون کریں۔